سندھ اینگروکول مائننگ کمپنی

پاکستان کے غیر استعمال شدہ کوئلے کے وافر ذخائر کی دریافت

سندھ حکومت اور اینگرو پاورجن لمیٹڈ (ای پی ایل)کی مشترکہ اسکیم/پروجیکٹ
سندھ اینگرو کول مائننگ کمپنی 2009 میں صحرائے تھر میں موجودبےشمار کوئلے کے ذخائر کو استعمال کرنے کی غرض سے وجود میں آئی تھی تاکہ پاکستان کی توانائی کی ضروریات، معاشی ترقی اور توانائی کی سلامتی ملک میں لائی جا سکے۔

حال ہی میں ہم نے کول مائننگ پروجیکٹ کی تمام ضروری ٹریننگ مکمل کر لی ہے جس سے اینگرو پاورجن لمیٹڈ کے قائم کردہ 1200 میگا واٹ پاور پلانٹ کو کوئلوں کی سپلائی/فراہمی ممکنہ طور پر کی جائے گی۔

پروجیکٹ کا تجزیہ چین اور جرمنی کے مشہور مشیر/کاؤنسلر آر ڈبلیو ای۔آر ای جی ایم بی ایچ اور سائنوکول انٹرنیشنل انجینیئرنگ ریسرچ اینڈ ڈیزائن انسٹیٹیوٹ نے کی تھی۔
ہم نےہگلر بیلی پاکستان اور ایس آر کے کنسلٹنگ ،یو کے، کو بھی اس کام کے سلسلے میں اپنے ساتھ شامل کیا ہے تاکہ مائننگ پروجیکٹ کےماحولیاتی اور معاشرتی تاثرکا تعین ہو سکے اور دنیا بھر کے جانے پہچانے ماحولیاتی اور معاشرتی درجوں کے ساتھ معاہدہ طے پا سکے جس میں بینالاقوامی معاش بھی شامل ہے۔

کاروبار/کمپنی اور ورلڈ بینک /عالمی بینک گروپ کی حکمتِ عملی
سندھ اینگرو کول مائننگ کمپنی کی اضافی مائننگ/کان کنی کی شروعات سال 2016 میں متوقع ہے۔

مئی 2013 میں کمپنی نے (ایس ای سی ایم سی) ایک مکمل طور پر ماتحت /ذیلی ادارہ تھر پاور کمپنی لمیٹڈ کے نام سے قائم کیا۔ پاور پلانٹ کے ممکنہ فائدے حاصل کرنے کے لیے ٹی پی سی ایل بھی قائم کیا تھا۔

تصور

تھر میں دنیابھر میں مانی جانے والی کان کنی کے ذریعےپاکستان کو توانا /مظبوط کرنا جبکہ تھر کے مقامیوں کی ترقی و خوشحالی کو بھی یقینی بنانا

  • رجسٹرڈ آفس : فورتھ فلور، دی ہاربر فرنٹ بلڈنگ، ایچ سی – 3، میرین ڈرائیو، بلاک 4، کلفٹن،
  • کراچی- 75600، پاکستان
  • پلانٹ سائٹ: اینگرو پاورجن قادر پور پلانٹ سائٹ، ڈیھ بیلو سنگھاری ، تہلکہ، ضلع گھوٹکی، پاکستان
  • کمپنی رجسٹریشن نمبر : 0070670
  • کمپنی کی حیثیت :پرائیویٹ کمپنی
  • این ٹی این : 33954030.8
  • قانونی مشیر: فیض محمد گھنگریو
  • بیرونی محاسب: اے۔ ایف۔ فرگوسن اینڈ کو چارٹرڈ اکاؤنٹنٹس